اگر عمران خاں کو مستعفی ہونا پڑ بھی گیا تو اگلا وزیر اعظم کون ہو گا ؟ اعلان کردیا گیا

اسلام آباد (نیوز ڈیسک) مولانا فضل الرحمن کا آزادی مارچ اسلام آباد پہنچ چکا ہے جس سے خطاب کرتے ہوئے جمیعت علمائے اسلام کے سربراہ مولانا فضل الرحمن نے کہا ہے کہ وزیر اعظم عمران خاں 2سے 3 دن کے اندر استعفی دے دیں ورنہ ہم اپنے آئندہ کے لائحہ عمل کا اعلان کریں گے ۔

دوسری جانب حکومت کی جانب سے وفاقی وزیر داخلہ اعجاز شاہ نے کہا ہے کہ اگر آزادی مارچ پُرامن ہوا تو حکومت اس آزادی مارچ کو ہر ممکن سہولت فراہم کرے گی لیکن اگر کوئی بھی غیرقانونی قدم اُٹھایا گیا تو قانون حرکت میں آئے گا حکومت بالکل بھی نہیں گھبرائی ہوئی ہے اس موقع پر صحافیوں نے سوال کیا کہ حکومت گھبراہٹ کا شکار نظر آ رہی ہے جس پر وزیر داخلہ اعجاز شاہ نے کہا کہ ایسا نہیں حکومت کسی قسم کی گھبراہٹ کا شکار نہیں اب کیا میں آپ کو ڈانس کر کے دکھاؤں تو پھر آپ کو یقین آئے گا کہ ہم گھبراہٹ کا شکار نہیں ہیں اس موقع پر وزیر داخلہ اعجاز شاہ نے اعلان کیا کہ اگر کسی مجبوری کی وجہ سے وزیر اعظم عمران خاں کو مستعفی ہونا پڑ بھی گیا تو اگلے وزیر اعظم پھر عمران خاں ہی ہوں گے اسلام آباد میں دھرنا کوئی نئی بات نہیں ہے یہ دھرنے سکندر مرزا کے دور سے ہوتے چلے آ رہے ہیں ہم نے کراچی سے لے کر گوجر خاں تک آزادی مارچ کو مکمل سیکورٹی فراہم کی ہے ہم نے کسی قسم کی رکاوٹ نہیں ڈالی بلکہ مولانا فضل الرحمن کے کنٹینر کے لئے جگہ بھی فراہم کی ہے دوسری جانب آز مولانا فضل الرحمن نماز جمعہ کے بعد خطاب کریں گے جس میں وہ آئندہ کے لائحہ عمل کا اعلان کریں گے۔

Share

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *