آج کی بڑی خبر: مولانا فضل الرحمن کو کرائی گئی یقین دہانی منظر عام پر آگئی

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) چند یوم قبل جب مولانا فضل الرحمن نے اسلام آباد میں آززادی مارچ کے بعد دھرنا دیا تھا تو اُن کے حکومت کے ساتھ مذاکرات ہوئے تھے جو ناکام ہوگئے تھے تاہم اُن کے مسلم لیگ ق کے رہنما و سپیکر پنجاب اسمبلی چودھری پرویز الہی سے ہونے والے مذاکرات کے نتیجے میں دھرنا ختم ہوا تھا ۔

اب کافی دنوں بعد خبر آگئی ہے جو مولانا فضل الرحمن کو کرائی گئی یقین دہانی کے متعلق ہے ۔ مولانا فضل الرحمن کا کہنا ہے کہ اُنہیں دسمبر کے مہینے میں حکومت کے جانے کا یقین دلایا گیا ہے ۔ اُنہوں نے کہا کہ یہ میرا دعوی نہیں ہے کہ نئے سال کے ابتدا میں الیکشن ہوں گے یا ایوان میں تبدیلی آئے گی بلکہ وہ  یہ بات اُن یقین دہانیوں کی بنیاد پر کر رہے ہیں جو اسلام آباد میں اُنہیں  دھرنے کے موقع پر کروائی گئیں تھیں۔جبکہ اگر اُنہیں کروائی گئی یقین دہانیوں پر اگر عملدرآمد نہ ہوا تو ملک بھر کی شاہرائیں ہوں گی اور ہم ہوں گے۔ مولانا فضل الرحمن نے کہا کہ اُنہوں نے وزیر اعظم عمران خاں کے استعفے کا مطالبہ کیا تھا جس کے متباد ل اُنہیں یقین دہانی کروائی گئی تھی کہ تین ماہ میں نئے الیکشن کروا دئیے جائیں گے۔ہم نے اس یقین دہانی کو قبول کر لیا کیونکہ ساری اپوزیشن کا مطالبہ ہی نئے الیکشن کا ہے۔ دوسری جانب مسلم لیگ ن کے قائد و سابق وزیر اعظم نواز شریف کی حالت بدستور تشویشناک ہے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے حسین نواز کا کہنا تھا کہ قوم نواز شریف کی صحت یابی کے لئے دعا  کرے ووہ اس وقت تشویشناک حالت میں ہیں۔

Share

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *