Breaking News

کورونا کی بگڑتی ہوئی صورتحال۔۔!! پنجاب میں دوبارہ لاک ڈاؤن کب شروع ہوگا؟ علیم خان نے واضح کر دیا

اسلام آباد (نیوز ڈیسک) ملک بھر میں کورونا کے مریضوں کی تعداد خطرناک حد تک بڑھ گئی ہے۔ واضح رہے کہ گزشتہ 24گھنٹوں کے دوران ملک میں کورونا سے ہونے والی اموات کی تعداد 88ہوگئی ہے۔ مزید نئے 3ہزار39کیسز رپورٹ ہونے کے بعد وائرس سے متاثرہ افراد کی مجموعی تعداد 69ہزار496 تک پہنچ گئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق گذشتہ 24گھنٹوں میں 88اموات کے ساتھ اس وقت مجموعی اموات 1483ہوچکی ہے ‘ آنے والے دنوں میں اموات اور کیسز کے اندرا ج کی رفتار میں مزید تیزی کا امکان ہے۔اب تک ملک میں 24ہزار271مریض صحتیاب ہوچکے ہیں جس کے بعد ایکٹو کیسز کی تعداد 42ہزار742 رہ ہوگئی ہے جن میں سے 111کی حالت تشویشناک ہے۔ اب تک 5 لاکھ 32 ہزار کے قریب ٹیسٹ کرچکے ہیں ، مصدقہ کیسز کی شرح 12.4 فیصد ہے،پاکستان میں 36 فیصد لوگ صحت یاب ہوئے ہیں۔ معاون خصوصی برائے صحت ظفرمرز نے ہم نیوز سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ ہر ملک اس کو کنٹرول کرنے کی کوشش کر رہا ہے اور آنے والے دنوں میں پاکستان میں کورونا کیسز میں مزید اضافہ ہوگا اور اموات بھی بڑھیں گی۔انہوں نے خبردار کیا ہے کہ پاکستان میں کورونا کیسزاوراموات میں تیزی سے اضافہ ہورہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اسپتالوں میں وینٹی لیٹرز پر بھی مریضوں کی تعداد میں بھی اضافہ ہوگا۔ ظفر مرزا کا کہنا تھا کہ پاکستان کے گنجان آباد علاقوں میں کورونا وائرس کے کیسز زیادہ ہیں۔ڈپٹی چیئرمین سینیٹ سلیم مانڈوی والا نے کہا ہے کہ اسلام آباد، لاہور اور کراچی کے اسپتالوں میں جگہ ختم ہوگئی ہے جس کے بعد انتظامیہ نے مریضوں کو گھر بھیجنا شروع کر دیا ہے۔

جبکہ وزیر خوراک پنجاب عبدالعلیم خان نے کہا ہے کہ پنجاب میں اب مکمل لاک ڈاؤن نہیں لگایا جائےگا، لاک ڈاؤن کورونا وائرس سے بچاؤ کا حل نہیں ہے، بلکہ احتیاط واحد علاج ہے، صنعتیں اور مارکیٹیں بند نہیں کی جاسکتیں۔ سینئر صوبائی وزیر عبدالعلیم خان نے آج یہاں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پنجاب میں اب دوبارہ مکمل لاک ڈاؤن نہیں لگایا جائےگا۔وزیراعظم عمران خان بھی کہہ چکے ہیں کہ لاک ڈاؤن کورونا وائرس سے بچاؤ کا حل نہیں ہے۔ کورونا وائرس سے بچاؤ کا حل اور علاج صرف احتیاطی تدابیر ہیں۔ لاک ڈاؤن ہمیشہ کیلئے نہیں لگا سکتے۔ کیونکہ لوگ کورونا کی بجائے بھوک سے زیادہ مریں گے۔ اس لیے اب پنجاب میں دوبارہ مکمل لاک ڈاؤن نہیں ہوگا۔ نہ ہی پنجاب میں مکمل طور پرصنعتیں اور مارکیٹیں بند نہیں کی جاسکتی ہیں۔تاہم لاک ڈاؤن میں نرمی یا سختی کا فیصلہ 31 مئی کو ہوگا۔ انہوں نے پنجاب کابینہ میں تبدیلی کے حوالے سے کہا کہ صوبائی وزراء کی کارکردگی کو دیکھ کر ہی کابینہ میں ردوبدل کیا جائے گا۔ دوسری جانب وزیراعظم عمران خان نے 31 مئی کو قومی رابطہ کمیٹی کا اجلاس طلب کرلیا ہے۔ اجلاس میں لاک ڈاؤن میں نرمی یا مزید سختی کرنے اور کورونا کیخلاف کئے گئے اقدامات پرغور کیا جائے گا۔اجلاس میں نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کے زیرتحت کیے گئے فیصلوں کی توثیق بھی کی جائے گی۔ اجلاس میں چاروں صوبائی وزراء اعلیٰ، وفاقی وزراء اور متعلقہ حکام شریک ہوں گے۔

About Admin

Check Also

میرے ایک سوال کا جواب دے دیں میں چپ چاپ تحریک انصاف میں شمولیت کا اعلان کردونگا ۔۔۔چودھری نثار نے بڑا اعلان کر دیا

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) اسے حسن اتفاق کہیے یا کچھ اور مسلم لیگ (ن) کے قائد …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *