Breaking News

بریکنگ نیوز: اسرائیل سے رابطوں کے بیان پر وزارت خارجہ سے اہم ترین استعفیٰ لے لیا گیا

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) آرمی چیف اور ڈی جی آئی ایس آئی سمیت اعلیٰ عسکری وفدد ورہ سعودیہ مکمل کرکے واپس آگیا ہے، تاہم اس دورے کے دوران ان کی سعودی ولی عہد محمد بن سلمان سے ملاقات نہیں ہوسکی۔ سینئر صحافی رئوف کلاسرا کے ہمراہ ویڈیو بلاگ میں سینئر صحافی عامر متین کا کہنا تھا کہ سعودی عرب سے جو خبریں آرہی ہیں۔

اس کے مطابق حالات مزید خراب ہونے سے رک گئے ہیں۔مگر ابھی بہتر نہیں ہوئے اور نہ ہی پہلی سطح پر آئے ہیں، گزشتہ 5 سے 7 ماہ کے دوران پاک سعودیہ تعلقات میں سرد مہری دیکھی گئی ہے اس کی وجہ یہ ہے کہ سعودی عرب کو تاثر ملا ہے کہ پاکستان کا ترکی اور ایران کی جانب جھکا ئوبڑھ رہا ہے اور اس سے سعودی عرب نظر انداز ہورہا ہے۔عامرمتین نے کہا کہ عسکری قیادت ملٹری ٹو ملٹری معاملات کو دیکھتی ہے، مگر سب جانتے تھے کہ آرمی چیف کے دورہ سعودیہ میں سفارتی معاملات بھی طے ہوں گے، مگر ایسا ہو نہیں پایا، سعودی عرب کی جانب سے کسی قسم کے مالی پیکیج کا اعلان نہیں کیا گیا اور نہ ہی کسی قسم کی گرمجوشی کا مظاہرہ کیا گیا۔رئوف کلاسرا نے کہا کہ خبروں کے مطابق محمد بن سلمان نے پاکستان کے آرمی چیف کے دورہ سے متعلق اپنی ٹیم کے ساتھ 3 گھنٹے طویل میٹنگ کی ، اس میٹنگ میں محمد بن سلمان کے چھوٹے بھائی خالد بن سلمان بھی شریک تھے جو سعودی عرب کے نائب وزیر دفاع بھی ہیں، دوسری جانب سوڈان نے اسرائیل سے رابطوں کے بیان پر وزارت خارجہ کے ترجمان حیدر بداوی صدیق کو برطرف کر دیا۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق سوڈانی وزارت خارجہ نے ایک بیان میں کہا ہے کہ حیدر بداوی صدیق کے بیان پر شدید حیرت ہے، ان کو کسی نے اس معاملے پر بات کرنے کا نہیں کہا تھا۔

سوڈانی وزارت خارجہ کا کہنا ہے کہ سوڈان نے اسرائیل سے سفارتی تعلقات کے بارے میں کوئی بات چیت نہیں کی اور نہ ہی ایسی کوئی بات وزارت خارجہ میں زیر بحث آئی ہے۔حیدر بداوی نے اپنی برطرفی کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ حکومت کو چاہیے کہ وہ عوام کا احترام کرتے ہوئے انہیں بتائے کہ سوڈان اور اسرائیل کے درمیان تعلقات کے لیے خفیہ طور پر کیا چل رہا ہے۔واضح رہے کہ حیدر بداوی نے گذشتہ روز مقامی میڈیا اور غیرملکی خبر ایجنسی کو بیان دیا تھا کہ سوڈان کا اسرائیل سے تعلقات قائم کرنے کا ارادہ ہے۔حیدر بداوی کا کہنا تھا کہ ہم اسرائیل سے امن معاہدہ کرنے کے خواہش مند ہیں، یہ تعلقات سوڈان کے مفاد میں قائم کیے جائیں گے اور امن معاہدہ رواں برس یا اگلے برس کے اوائل تک ہوگا۔ سوڈانی وزارت خارجہ کا کہنا ہے کہ سوڈان نے اسرائیل سے سفارتی تعلقات کے بارے میں کوئی بات چیت نہیں کی اور نہ ہی ایسی کوئی بات وزارت خارجہ میں زیر بحث آئی ہے۔حیدر بداوی نے اپنی برطرفی کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ حکومت کو چاہیے کہ وہ عوام کا احترام کرتے ہوئے انہیں بتائے کہ سوڈان اور اسرائیل کے درمیان تعلقات کے لیے خفیہ طور پر کیا چل رہا ہے۔واضح رہے کہ حیدر بداوی نے گذشتہ روز مقامی میڈیا اور غیرملکی خبر ایجنسی کو بیان دیا تھا کہ سوڈان کا اسرائیل سے تعلقات قائم کرنے کا ارادہ ہے۔حیدر بداوی کا کہنا تھا کہ ہم اسرائیل سے امن معاہدہ کرنے کے خواہش مند ہیں، یہ تعلقات سوڈان کے مفاد میں قائم کیے جائیں گے اور امن معاہدہ رواں برس یا اگلے برس کے اوائل تک ہوگا۔

About Admin

Check Also

ایک سعودی شخص نے فلپائینی عورت سے چھپ کر شادی کر لی چونکہ وہ پہلے شادی شدہ تھا۔ پھر ایک دن۔۔۔

اسلام آباد(نیوز ڈیسک)ایک سعودی شخص نے فلپائینی عورت سے چھپ کر شادی کر لی۔ چونکہ …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *