عاصم سلیم باجوہ ماہانہ کتنی تنخواہ لیتے ہیں ؟ ہوش اڑا دینے والی تفصیلات آ گئیں

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) وزیراعظم کے معاون خصوصی و چیئرمین سی پیک اتھارٹی لیفٹیننٹ جنرل ریٹائرڈ عاصم سلیم باجوہ نے کہا ہے کہ منتخب نمائندہ نہیں پھربھی عمران خان کی ہدایت پر اثاثے ظاہر کیے۔نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے عاصم سلیم باجوہ نے کہا کہ سی پیک اتھارٹی میں تعیناتی ہوئی تو پروپیگنڈا شروع کردیا گیا۔

عاصم سلیم باجوہ نے کہا کہ میرے بھائیوں نی2002میں امریکامیں کاروبارشروع کیا،میری3بھائی 1991میں امریکا پڑھنے گئے تھے اورپھرکاروبارکیا، کاروبار سے متعلق لکھا ہوا ہے کہ60فیصد بینکوں سے قرضہ لیاگیا۔ جبکہ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق چیئر مین سی پیک اتھارٹی عاصم سلیم باجوہ نے بطور وزیراعظم عمران خان کے معاون خصوصی برائے اطلاعات کے عہدے سے استعفی دینے کا فیصلہ کرلیا۔ انہوں نے واضح کیا ہے کہ ان کے پاس ہر چیز کا 100 فیصد دستاویزی ریکارڈ موجود ہے۔نجی نیوز چینل دنیا نیوز کے مطابق انہوں نے کہا ہےکہ معاون خصوصی اطلاعات کےعہدےسےمستعفی ہونےکافیصلہ کیاہے،جلدوزیراعظم عمران خان کواستعفیٰ پیش کروں گا۔ان کا کہنا تھا کہ چیئرمین سی پیک اتھارٹی کےعہدےپرکام کرتارہوں گا، سی پیک منصوبےپرپوری توجہ دیناچاہتاہوں۔نجی ٹی وی جیو نیوز کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے لیفٹیننٹ جنرل (ر) عاصم سلیم باجوہ نے کہا کہ کمپنیوں میں جس کا جتنا شیئر تھا اسی حساب سے منافع ملا ہوگا۔ کچھ پرافٹ آئے لیکن زیادہ تر پیسے بینک کے قرض کی ادائیگی میں گئے ہیں، 70 میں سے 60 ملین ڈالر بینک کا قرضہ تھا جس سے اندازہ لگایا جاسکتا ہے کہ بینک کو کتنا حصہ جاتا رہا ہوگا۔اینکر پرسن شاہزیب خانزادہ نے ان سے سوال پوچھا کہ اگر آپ کی اہلیہ نے یکم جون کو پیسے بزنس سے نکال لیے تو وہ پیسے کہاں گئے، کیا وہ پاکستان آئے؟

وزیر اعظم کے معاون خصوصی برائے اطلاعات و چیئرمین سی پیک اتھارٹی لیفٹیننٹ جنرل (ر) عاصم سلیم باجوہ نے کہا ہے کہ ان کی 50 لاکھ روپے تنخواہ کا دعویٰ جھوٹا ہے ، ان کی اصل سیلری 7 لاکھ 99 ہزار روپے ہے۔ انہوں نے اپنے اثاثوں کے بارے میں وزیر اعظم عمران خان کی ہدایت پر وضاحت جاری کی۔نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے لیفٹیننٹ جنرل (ر) عاصم سلیم باجوہ نے کہا کہ ان کے چیئرمین سی پیک اتھارٹی بننے کے بعد ان کے خلاف پراپیگنڈا شروع کردیا گیا اور دعویٰ کیا گیا کہ ان کی تنخواہ 50 لاکھ روپے ہے حالانکہ ان کی بطور چیئرمین اصل تنخواہ 7 لاکھ 99 ہزار روپے ہے۔ انہوں نے کہا کہ وہ منتخب نمائندے نہیں ہیں لیکن پھر بھی وزیر اعظم کی ہدایت پر اپنے اثاثوں کی وضاحت کی، تاریخ میں پہلی بار ہوا ہے کہ کسی نے سوشل میڈیا سٹوری پر اتنی تفصیلی وضاحت جاری کی ہو۔ ان کے پاس ہر چیز کی منی ٹریل موجود ہے اور وہ قانونی پلیٹ فارم پر منی ٹریل فراہم کرنے کیلئے تیار ہیں۔ ہدایت پر وضاحت جاری کی۔نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے لیفٹیننٹ جنرل (ر) عاصم سلیم باجوہ نے کہا کہ ان کے چیئرمین سی پیک اتھارٹی بننے کے بعد ان کے خلاف پراپیگنڈا شروع کردیا گیا اور دعویٰ کیا گیا کہ ان کی تنخواہ 50 لاکھ روپے ہے حالانکہ ان کی بطور چیئرمین اصل تنخواہ 7 لاکھ 99 ہزار روپے ہے۔ انہوں نے کہا کہ وہ منتخب نمائندے نہیں ہیں۔

About Admin

Check Also

دہائیوں پرانی رفاقت کا خاتمہ۔۔۔!!! پیپلز پارٹی کے بانی رہنماء نے تحریک انصاف میں شمولیت اختیار کرلی

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) کپتان ہو یا کھلاڑی، کھیل کا میدان ہ یا سیاسی میدان، بس …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *