وزیر اعظم کے بیانات! آئی ایس پی آر سے وضاحت طلب کر لی گئی

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) جب سے وزیر اعظم عمران خاں کے معاون خصوصی عاصم سلیم باجوہ کے اثاثے منظر عام پر آئے ہیں تب سے سوشل میڈیا پر ایک ہنگامہ کھڑا ہو گیا ہے باوجود اس کے کہ عاصم سلیم باجوہ نے ان الزامات کی تردید کی ہے مگر یہ طوفان رُکنے کا نام ہی نہیں لے رہا اب آئی ایس پی آر سے ایک بڑا مطالبہ کر دیا گیا ہے۔

پیپلزپارٹی نے آئی ایس پی آر سے وزیراعظم کے بیان پر وضاحت دینے کا مطالبہ کر دیا ہے۔پیپلز پارٹی کے سینئر رہنما نیئر بخاری نے کہا ہے کہ افواج پاکستان قومی سلامتی اور سرحدوں کی حفاظت کی ذمہ دار اور ہنگامی صورت حال میں مددگار ہے۔ وزیراعظم کی افواج پاکستان کے حوالے سے ابہام پیدا کرنے کی پالیسی کو مسترد کرتے ہیں،آئی ایس پی آر کو وزیراعظم کے بیانات پر وضاحت جاری کرنی چاہئے۔ان کا کہنا تھا کہ وزیراعظم ایک دن کہتے ہیں افواج پاکستان سے کوئی تنازعہ نہیں ہے،اگلے دن کہتے ہیں حکومت کو فوج کااعتماد حاصل ہے،حکومتیں عوامی اعتماد کی مرہون منت ہوتی ہیں نہ کہ بیساکھیوں کے سہاروں کی،وزیراعظم پارٹی اور اتحادیوں کا اعتماد کھو چکے ہیں۔دوسری جانب پیپلزپارٹی کی رہنما نفیسہ شاہ نے وزیراعظم کے معاون خصوصی کے استعفے کے معاملے پر ردعمل کا اظہار کرتے ہوے کہا ہے کہ استعفی قبول نہ کرنا مضحکہ خیز ہے۔ اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ تبدیلی اور انصاف کا نعرہ لگانے والی سلیکٹیڈ حکومت بے نقاب ہو چکی ہے، انہوں نے کہا ثابت ہوگیا کہ سلیکٹیڈ وزیراعظم مافیا اور عوام کی جیبوں پر ڈاکے ڈالنے والوں کی سرپرستی کر رہے ہیں، انہوں نے کہا وزیراعظم کو فوری عاصم سلیم باجوہ کا استعفی قبول کرنا چاہئے۔ انہوں نے کہا وزیراعظم کے معاون خصوصی کی وضاحتاپنی جگہ لیکن معاملے کی آزادانہ تحقیقات بھی ناگزیر ہے۔ انہوں نے کہا سلیکٹیڈ وزیراعظم کی کابینہ مسلسل اسکینڈلز کی زد میں ہے۔ انہوں نے کہا عاصم سلیم باجوہ کی شخصیت اب متنازعہ بن چکی ہے۔

About Admin

Check Also

اب ہر سرکاری ملازم کے پاس اپنا گھر،اپنی گاڑی ہوگی اورحکومت نے انتہائی شاندار اعلان کر دیا

اسلام آباد(نیوز ڈیسک)ہر سرکاری ملازم کی خواہش ہوتی ہے کہ اُس کے پاس اپنا ذاتی …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *