Breaking News

اب ہوں گے بڑے بڑوں کے راز فاش ۔۔۔!!! صحافیوں کے گرد گھیرا تنگ ، اتنا پیسہ کہاں سے آیا ؟

اسلام آباد(نیز ڈیسک) پاکستان کے صحافی شاید دنیا کے امیر ترین صحافی ہیں اسی لئے ان کو لفافہ صحافی بھی کہا جاتا ہے اور غیر جانبدار صحافی تو شاید ہی ڈھونڈنے سے مل سکیں آج تک کسی بھی حکومت نے صحافیوں کا احتساب نہیں کیا بلکہ لفافے تقسیم کر کے ان صحافیوں کو اپنے مقصد کے لئے استعمال کیا گیا ہے۔

تاہم اب سینیئر صحافی منصور علی خان نے حکومت پاکستان سے صحافیوں کے اثاثوں کی چھان بین کرنے کا مطالبہ کردیا۔ نجی ٹی وی پروگرام میں وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات کی جانب سے پوچھے گئے سوال کے جواب میں منصور علی خان نے کہا کہ آپ پاکستان کے تمام اینکرز کے اثاثوں کی جانچ کریں اور سب سے پہلے مجھ سے شروع کریں۔پروگرام میں وفاقی وزیر شبلی فراز نے کہا کہ اگر ہم صحافیوں سے سوال کریں کہ ان کے پاس دولت کہاں سے آئی، یہ لاکھوں روپے کی گاڑیاں کہاں سے آئی ہیں تو صحافی کہیں گے کہ یہ آزادی اظہار رائے پر حملہ ہے۔ جس کے جواب میں سینیئر صحافی منصور علی خان نے کہا کہ حکومت تمام صحافیوں کے گزشتہ بیس سالوں کے اثاثوں کی تحقیقات کروائے اور بطور وزیر اطلاعات آپ اس کام کی ابتدا کریں اور سب سے پہلے میں اپنے اثاثوں کی تفصیلات دینے کے لیے تیار ہوں، آپ باقیوں کی بھی تحقیقات کریں کوئی آپ کو یہ نہیں کہے گا کہ یہ آزادی صحافت پر حملہ ہے ۔منصور علی خان نے کہا کہ میں آن ایئر کہتا ہوں کہ آپ تمام صحافیوں کے چاہے وہ کسی بڑے سے بڑے چینل سے تعلق رکھتا ہو، بڑے سے بڑا صحافی ہو، سب کے اثاثے چیک کریں، انہوں نے اور ان کے خاندان والوں نے پیسہ کیسے بنایا یہ تحقیقات کروائیں اور ان سے حساب مانگیں، اور اگر کوئی اسے آزادی صحافت پر حملہ کہے گا تو میں آپ کے ساتھ کھڑا ہوں گا، آپ سب سے پہلے میرے اثاثوں کی تحقیقات سے آغاز کریں ۔ جس کے جواب میں وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات نے کہا کہ میں آپ کو مثال دے رہا تھا کہ شریف خاندان سے جب ہم ایسے سوال پوچھتے ہیں تو وہ اس کو انتقامی کارروائی کہنے لگتے ہیں۔

About Admin

Check Also

پی ٹی آئی کو دھچکا! اہم ترین رہنماء کو انتخابات کے لیے نا اہل قرار دے دیا گیا

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) ضمنی الیکشن سے قبل پاکستان تحریک انصاف کو بڑا جھٹکا لگ گیا …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *