Breaking News

حکومت نے موٹر سائیکلیں، کاریں، مکانات یہاں تک کہ سائیکلیں خریدنے کے خواہشمند سرکاری ملازمین کو بِلاسود قرضے فراہم کرنے کا اعلان کر دیا

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) سرکاری ملازمین اپنی تنخواہ میں مہنگائی کے اس دور میں بڑی مشکل سے گزر بسر کرتے ہیں اُن کے لئے مکان بنانا ، موٹر سائیکل یا کار وغیرہ خریدنا ایک بہت ہی مشکل کام ہے ۔ ان حالات میں تبدیلی حکومت نے سرکاری ملازمان کو بہت بڑی خوش خبری سُنا دی ہے۔

تفصیلات کے مطابق خیبر پختونخوا کی صوبائی حکومت نے سرکاری ملازمین کو بلا سود قرضہ دینے کا فیصلہ کیا ہے۔ ذرائع کے مطابق سرکاری ملازمین موٹر سائیکل، کاروں، مکانات یہاں تک کہ سائیکلوں کے لئے بھی قرض لے سکے گے اور یہ بلاسود قرضہ ہوگا۔ گریڈ 1 سے 17 تک کے سرکاری ملازمین جن کی ملازمت کم سے کم مدت پانچ سال اور زیادہ سے زیادہ دس سال ہے، وہ قرض کے لئے درخواست دینے کے اہل ہوں گے۔ گریڈ 18 اور اس سے اوپر کے ملازمین صرف کار کی خریداری کے لئے قرض کے لئے درخواست دے سکتے ہیں، سرکاری ملازمین آٹھ ہزار سے اڑھائی لاکھ تک قرض حاصل کر سکیں گے۔ اس سے قبل خواتین کے لئے بھی بلاسود قرضوں کااعلان کیا گیا تھا۔ دوسری جانب مسلم لیگ ن کے سینئر رہنما و رکن قومی اسمبلی رانا ثنا اللہ نے نجی ٹی وی پروگرام میں کہا ہے کہ نواز شریف کا بیانیہ بھی یہی ہے کہ خواہ کوئی کردار ہو یا ادارہ ہو ،پارلیمنٹ کا کوئی سیاستدان یا غیر سیاستدان ہو ، وہ اپنے آپ کو آئینی کردار تک محدود کرے اوراس ملک کو آئین اور قانون کے مطابق چلایا جائے ،عوامی مینڈیٹ کا احترام کیا جائے ۔تفصیلات کے مطابق صحافی کے سوال پر رانا ثنا ء اللہ کا کہنا تھا کہ اگر آپ پاکستان مسلم لیگ پر تنقید کرتے ہیں تواس میں نواز شریف کا نام استعمال کر لیں تو دونوں میں کوئی فرق تو نہیں ہے کیونکہ ن لیگ ہی نواز شریف ہے ۔

About Admin

Check Also

عدالت کا منفرد فیصلہ، ملزمان کو پنج وقتہ نماز پڑھنے، درخت لگانے اور مساجد کی صفائی کا حکم

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) بجلی کی تاروں میں الجھ کر تین بھینسوں کے مرنے کے کیس …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *