Breaking News

سابق چیف جسٹس نے عمران خان کے لیے خطرے کی گھنٹی بجا دی

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) سب جانتے ہیں کہ تحریک انصاف کے پاس پہلے ایک سیٹ تھی اسکی وجہ یہ تھی کہ اس جماعت کے پاس پیسے کی کمی تھی، لیکن 2013ء کے عام انتخابات کے بعد صورتحال بدل گئی اور تحریک انصاف کے پاس بہت پیسہ آگیا اور وہ اپنی مرضی سے پیسہ استعمال کرنے لگی۔

سندھ ہائی کورٹ کے سابق چیف جسٹس کا کہنا ہے کہ اگر فارن فنڈنگ کیس میں تحریک انصاف کے خلاف فیصلہ آگیا اور 2018 کے انتخابات کو غیر قانونی قرار دے دیا گیا تو پھر تحریک انصاف کی حکومت ختم ہوجائے گی ۔ نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے جسٹس (ر) شائق عثمانی کا کہنا تھا کہ تحریک انصاف کو فنڈنگ اندرون ملک نہیں بلکہ بیرون ملک سے ہوئی ہے، کیونکہ پاکستان میں موجود ڈونر صرف اس جماعت پر پیسہ لگاتے ہیں جسکا اقتدار میں آنے کا امکان ہو لیکن تحریک انصاف کا 2013ء کے انتخابات میں کوئی بھی ایسا امکان نہیں تھا ، اب یہ معلوم نہیں کہ اتنا سارا پیسہ کہاں سے آیا اور کس طرح آیا۔ جسٹس (ر) شائق عثمانی کے مطابق بظاہر یہی لگتا ہے کہ پیسہ باہر سے آیا ہے، باہر سے پاکستان پیسہ لانے کا کوئی نقصان نہیں شرط یہ ہے طریقہ قانونی ہو، اوور سیز پاکستانی کسی بھی جماعت کو فنڈ دے سکتے ہیں لیکن اگر یہ ہی پتہ نہ ہو کہ پیسہ آیا کہاں سے ہے تو پھر کسی بھی جماعت کے لیے خطرے کی نشانی ہے۔

About Admin

Check Also

اسلام آباد میں مساج سنٹر پر چھاپہ، پکڑے جانیوالے شخص نے اپنا تعلق کس حکومتی شخصیت کیساتھ بتایا؟؟ ویڈیو وائرل

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) وفاقی پولیس نے مساج سنٹر پر چھا پہ مار کارروائی کرتے ہوئے …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *