سپریم کورٹ کے ججوں کے درمیان سنگین اختلافات قاضی فائز عیسیٰ کی جانب سے لکھا گیا تہلکہ خیز خط منظر عام پر آگیا

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) چیف جسٹس آف پاکستان نے جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کو وزیراعظم سے متعلق مقدمات سننے سے روک دیا ، تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس گلزار احمد نے اراکین اسمبلی کو ترقیاتی فنڈز فراہمی کیس کے تفصیلی فیصلہ جاری کر دیا۔5صفحات پرمشتمل فیصلہ چیف جسٹس پاکستان جسٹس گلزاراحمد نے تحریر کیا۔

چیف جسٹس کی جانب سے جاری کردہ تفصیلی فیصلے میں جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کو وزیراعظم سے متعلق مقدمات سننے سے روک دیا گیا۔ چیف جسٹس نے اپنے فیصلے میں لکھا ہے کہ جسٹس قاضی فائز عیسیٰ نے وزیراعظم کیخلاف مقدمہ دائر کر رکھا ہے، انصاف کے تقاضوں اور غیر جانبداری کے پیش نظر وہ وزیراعظم سے متعلق مقدمات نہ سنیں جبکہ وزیراعظم عمران خان کی جانب سے ارکان اسمبلی کو ترقیاتی فنڈز جاری کرنے کے معاملے کے فیصلے کی کاپی نا ملنے پر سپریم کورٹ کے جج جسٹس قاضی فائز عیسیٰ نے سوالات اٹھادیے۔ تفصیلات کے مطابق جسٹس قاضی فائز عیسی ٰنے رجسٹرار سے تحریری فیصلے کی کاپی طلب کر لی ۔رجسٹرار سپریم کورٹ کے نام لکھ گئے ایک خط میں انہوں نے لکھا کہ کیس کے تحریری فیصلے کی کاپی مجھے نہیں دی گئی ، حالاں کہ بینچ کا حصہ بننے والے ججز کو فیصلے کی کاپی فراہم کی جاتی ہے ، جسٹس اعجاز الاحسن کو فیصلے کی کاپی موصول ہوئی مگر مجھے نہیں ، جب کہ مجھ سے پہلے میڈیا کے ذریعے کیس کے فیصلے سے پوری دنیا کو پتا چل چکا تھا۔ جسٹس قاضی فائز عیسیٰ نے لکھا کہ حیران ہوں مجھے ابھی تک آرڈر کی فائل موصول کیوں نہیں ہوئی، کاپی فراہم کرنے سے پہلے میڈیا کو کیسے دے دی گئی؟ فیصلہ میڈیا کو جاری کرنے کا آرڈر کس نے دیا؟ مجھے فیصلے سے اتفاق یا اختلاف کا موقع کیوں فراہم نہیں کیا گیا؟ مجھے مقدمے کی فائل فراہم کی جائے تاکہ فیصلہ پڑھ سکوں۔

About Admin

Check Also

سکولوں میں موسم گرما کی تعطیلات نہیں ہوں گی حکومت نے فیصلہ سنا دیا

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) کورونا وائرس کے باعث ہونے والی تعطیلات والدین اور بچوں کے لئے …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *