وزیراعظم عمران خان کے والد کو”جہنمی”قرار دینے پر شہباز گل کا شہلا رضا کوایسا جواب دے دیا کہ کسی کو منہ دکھانے کے قابل نہ رہیں

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) تفصیلات کے مطابق سندھ سے پیپل پارٹی کی مرکزی رہنما شہلا رضا نے ٹویٹ کیا اور وزیراعظم عمران خان کے والد پر ذاتی حملے کرنا نہ بھولیں۔ یہ تک کہہ دیا کہ وزیراعظم عمران خان کے والد جہنم واصل ہوئے ہیں۔شہلارضا نے ٹویٹ کرتے ہوئے کہا کہ ذوالفقار علی بھٹو کو پوری قوم جانتی ہے ۔

کیا ایک شخص بھی واپڈا کے راشی ملازم کا یوم وفات جانتا ہے جس روز وہ جہنم و اصل ہوا تھا اس پر شہباز گل نے شہلا رضا کو جواب دیتے ہوئے کہا کہ لعنت ہے آپ کی سوچ پر تربیت پر گھٹیا بن پر اور جو سستی اور گھٹیا مشروب پی کر آپ گند بکنے پر اتر آتی ہیں اس گھٹیا مشروب پر۔ شہلا رضا نے اخلاق سے گرا ٹویٹ کرکے اپنی لیڈران کو خوش کیا یا نہیں لیکن الٹا اپنے ہی لیڈر ذوالفقار علی بھٹو اور دیگر قائدین کو گالیاں پڑوادیں۔ سوشل میڈیا صارفین ذوالفقار علی بھٹو کی ہسٹری کھولتے رہے کہ کیسے اس نے ایک ڈکٹیٹر کی سرپرستی میں سیاست شروع کی، کیوں وہ ایوب خان کو ڈیڈی کہا کرتا تھا، کیسے اس نے وزیراعظم بننے کیلئے پاکستان کے ڈو ٹکڑے کروائے۔تحریک انصاف کے ڈپٹی سیکرٹری اطلاعات ہنس منصور بدوی نے جواب دیتے ہوئے کہا کہ اس شخص کے مرنے کا دن ہے جس نے اپنی کرسی کی حوس میں پاکستان کے دو ٹکڑے کئے۔ ایک سوشل میڈیا صارف نے اوریا مقبول جان کا جواب میں کلپ شئیر کیا کہ بھٹو نے اقتدار کی منتقلی شیخ مجیب الرحمان کو روکنے کیلئے کیا بہانہ کیا اور کیسے مشرقی پاکستان کو بنگلہ دیش میں تبدیل کروایا؟ ایک سوشل میڈیا صارف نےصحافیوں سے سوال کیا کہ پی ٹی آئی والوں کی زبان خراب ہے۔

اسکے بارے میں کیا کہیں؟؟؟معروف صحافی مجیب الرحمان شامی کے مطابق وزیراعظم عمران خان کے والد ایک انجینئر تھے، وہ بھٹو دور کے سابق وزیرخزانہ ڈاکٹر مبشرحسن کے کلاس فیلو تھے، دونوں لندن نے امپیریل کالج سے تعلیم حاصل کی مجیب الرحمان شامی کا مزید کہنا تھا کہ عمران خان کے والد محترم اچھے انجینئر اور اچھے انسان تھے۔ وہ ایکسین تھے اور انہوں نے نواب آف کالا باغ کے دور میں خود استعفی دیا تھا کیوں کہ میانوالی میں نیازی فیملی اور نواب فیملی ایک دوسرے کے مقابل تھے۔اس لئے اس بات میں کسی بھی قسم کی صداقت نہیں اور ان کے خلاف ایک بے بنیاد پروپیگنڈہ کیا جارہا ہے ۔وزیراعظم عمران خان کے کزن حفیظ اللہ نیازی جو عمران خان کے سب سے بڑے مخالف ہیں کچھ عرصہ قبل ان کا جیو کے پروگرام “رپورٹ کارڈ” میں کہنا تھا کہ عمران خان کے والد پر کرپشن کے جھوٹے الزامات لگتے ہیں ،وہ میرے چچا ہیں اور میں انہیں جانتا ہوں ،وہ بہت دیانت دار افسر تھے ۔ واضح رہے کہ ذوالفقار علی بھٹو 1971 میں پاکستان کے وزیراعظم بنے جبکہ وزیراعظم عمران خان کے والد نے 1967 میں ملازمت سے استعفیٰ دیدیا تھا جس کی وجہ اس وقت کے مغربی پاکستان کے گورنر نواب آف کالاباغ سے وزیراعظم عمران خان کے خاندان کے اختلافات تھے۔

About Admin

Check Also

دہائیوں پرانی رفاقت کا خاتمہ۔۔۔!!! پیپلز پارٹی کے بانی رہنماء نے تحریک انصاف میں شمولیت اختیار کرلی

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) کپتان ہو یا کھلاڑی، کھیل کا میدان ہ یا سیاسی میدان، بس …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *