Breaking News

اگرمسلم لیگ ن کے یہ دو رہنما اسمبلیوں سے استعفے دے دیں توپیپلزپارٹی کے تمام اراکین استعفے دے دیں گے، پیپلز پارٹی کے اعلان نے ملکی سیاست میں تہلکہ مچا دیا

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) واضح رہے کہ پی ڈی ایم کے پلیٹ فارم سے ن لیگ اور پی پی سمیت دیگر جماعتوں میں یہ بات طے پائی تھی کہ سینٹ میں قائد حزب اختلاف ن لیگ کا ہو گا، تاہم پیپلز پارٹی نے اپنے امیدوار یوسف رضا گیلانی کو اپوزیشن لیڈر منتخب کروا دیا، جس کے بعد ن لیگ اور پیپلز پارٹی کے درمیان شدید اختلافات پیدا ہو گئے۔

 اور اب ن لیگ نے پی ڈی ایم میں پیپلزپارٹی کے خلاف ایک اتحاد بنانے کافیصلہ کر لیا ہے۔نجی ٹیلی ویژن چینل کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے پیپلز پارٹی کے سینئر رہنما حیدر زمان قریشی نے کہاکہ اگر شہباز شریف اور حمزہ شہباز اسمبلیوں سے استعفے دے دیں تو میں خود پیپلزپارٹی کے استعفے جمع کراؤں گا۔ تفصیلات کے مطابق نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں پی پی رہنما حیدرزمان قریشی نے کہا کہ مسلم لیگ نون اگر اپوزیشن لیڈر شہباز شریف اور حمزہ شہباز کے استعفیٰ لے تو وہ پیپلزپارٹی کے استعفیٰ وہ خود جمع کرائیں گے۔ دوسری طرف پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے ن لیگ کے سینئر رہنما رانا ثناءاللہ نے پیپلزپارٹی پر الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ پیپلزپارٹی نے حکومتی اتحادیوں کےساتھ ہاتھ ملایا۔انہوں نے کہا کہ پیپلزپارٹی نے پی ڈی ایم کے پہلے سربراہی اجلاس میں موقف اپنایا تھا کہ استعفیٰ دیے بغیر حکومت کے خلاف تحریک چلانی چاہیے جبکہ پی ڈی ایم میں شامل تمام جماعتوں کا موقف تھا کہ لانگ مارچ کے ساتھ اسمبلیوں سے استعفیٰ دیے جائیں۔ رانا ثناءاللہ کا کہنا تھا کہ پی پی شہبازشریف اور حمزہ کا استعفیٰ لے اور اپنے استعفے دے، پیپلزپارٹی غلطی کی وضاحت نہیں کرسکتی،اس لیے غلطی مانے۔ پنجاب میں کسی ووٹ کی ہیرا پھیری نہیں ہوئی۔ پیپلزپارٹی سے ہر چیز پربات ہوسکتی ہے پہلے انہیں اپنی پوزشین واضح کرنی ہوگی۔

About Admin

Check Also

پی ٹی آئی نے بڑی وکٹ اُڑا دی! گوجرانوالہ اہم سیاسی شخصیت تحریک انصاف میں شامل ہوگئی

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) آج کے دن پاکستان تحریک انصاف ایک اور بڑی وکٹ گرانے میں …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *