Breaking News

پی ٹی آئی قیادت پھر پھنس گئی؟ اب کونسی غلطی ہوگئی؟

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) پی ٹی آئی کی قیادت قومی اسمبلی کی رکنیت کی استعفوں کی سیا ست میں پھنس کر رہ گئی۔ تفصیلات کے مطابق پارٹی کے سینئر وائس چیئر مین شاہ محمود قریشی نے قومی اسمبلی کے اجلاس میں وزارت عظمیٰ کے الیکشن کا بائیکاٹ کرتے ہوئے یہ اعلان کیا تھا ۔

کہ پی ٹی آئی کے ممبران اسمبلی مستعفی ہو جائیں گے۔ اسپیکر آفس کے ذ رائع نے بتایا ہے کہ اب تک پی ٹی آئی کے 123ممبران نے اپنے استعفے جمع کرائے ہیں،یہ استعفے ایک فارمیٹ پر دیئے گئے ہیں جو پارٹی کی جانب سے بنایا گیا تاہم ممبران نے اس پر دستخط کیے ہیں۔ رولز کے تحت جو ممبر مستعفی ہو تو اسے ہاتھ سے تحر یر لکھنی چاہیے اور خود اسپیکر کے حوالے کرنا چاہیے تاہم کسی دوسرے ذ ریعہ سے استعفیٰ پہنچنے کی صورت میں اسپیکر رولز کے تحت پابند ہے کہ متعلقہ رکن کو بلا کر یا کسی ایجنسی سے تصدیق کرے کہ یہ استعفیٰ ممبر نے رضاکا رانہ طور پر بغیر کسی دباؤ کے دیا ہے۔ دوسری جانب پاکستان آرمی کے شعبہ تعلقات عامہ کے ڈائریکٹر جنرل (ڈی جی آئی ایس پی آر)میجر جنرل بابر افتخار کا کہنا ہے کہ الیکشن کب ہوں گے اس بات کا فیصلہ حکومت اور سیاستدانوں نے کرنا ہے اور انہیں کوئی مشورہ نہیں دے سکتا ۔ پریس بریفنگ کے دوران صحافی کے سوال پرعمران خان جلسے کررہے ہیں، کیا آپ سمجھتے ہیں کہ جلد انتخابات ہونے چاہییں ؟ جس پر میجر جنرل بابر افتخار کا کہنا تھا کہ جلسے جلوس اور ریلیاں جمہوریت کا حصہ ہیں،اور تمام جمہوری ملکوں میں یہ سب ہوتا ہے لوگ کھل کر بات کرتے ہیں جو انہیں اچھا لگتا ہے جو انہیں برا لگتا ہے عوام اس پر بولتے ہیں ۔

About Admin

Check Also

قبل از وقت انتخابات ہوئے تو کون سی جماعت فائدے میں رہے گی؟ سیاسی ماہرین نے عوام کو صاف صاف بتا دیا

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) پاکستان میں جاری سیاسی و معاشی بحران کے تناظر میں بعض ماہرین …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *