Breaking News

نیا آرمی چیف کون ہوگا ؟تمام دعوے غلط ثابت ہو گئے

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) موجودہ آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کی مدت ملازمت ماہ نومبر میں اختتام پذیر ہو رہی ہے اس وقت وہ ایکسٹینشن پر کام کر رہے ہیں اُن کو تین سال کے لئے مدت ملامت کی توسیع دی گئی تھی۔ تاہم اب نئے آرمی چیف سے متعلق تمام قیاس آرائیاں دم توڑ گئیں ہیں۔

ڈی جی آئی ایس پی آر نے آرمی چیف کی ایکسٹینشن سے متعلق دو ٹوک اعلان کرتے ہوئے کہا کہ آر می چیف ایکسٹینشن نہیں چاہتے اور نہ ہی قبول کرینگے ۔ترجمان پاک فوج ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل بابر افتخار نے کہا جنرل قمر جاوید باجوہ 29 نومبر کو ریٹائر ہو جائینگے ،جس طرف پاک فوج کا سپہ سالار دیکھتا ہے ،سات لاکھ فوج اُسی طرف دیکھتی ہے ۔میجر جنرل بابر افتخار نے کہا حکومت سے بہترین تعلق رکھنا فوج کی ذمہ داری ہے ،فوج کا سیاست سے کوئی لینا دینا نہیں لہذا فوج کو سیاست میں مت گھسیٹیں ،مسلح افواج مکمل متحد اور کوئی تقسیم نہیں ۔ڈی جی آئی ایس پی آر نے کہا کہ عوام اور سیاسی جماعتوں سے درخواست ہے کہ ہمیں سیاست میں مت گھسیٹیں۔ بہتر ہو گا ہم اپنے فیصلے قانون پر چھوڑ دیں کیونکہ قانون پر عملدرآمد سے ہی معاشرے ترقی کرتے ہیں، آج وقت ہے کہ ہم انفرادی اور اجتماعی کردار ادا کر کے اداروں کو مضبوط کر سکیں۔ ان کا کہنا تھا کہ تعمیری تنقید مناسب ہے مگر افواہوں کی بنیاد پر سازشوں کے تانے بانے بننا اور کردار کشی کرنا کسی بھی طرح قابل قبول نہیں ہے۔ ’ڈیپ فیک‘ ٹیکنالوجی کا استعمال کر کے ریٹائرڈ آرمی آفیسرز کے جعلی آڈیو میسجز بنائے جا رہے ہیں تاکہ معاشرے میں افواج اور عوام کے درمیان انتشار پھیلایا جائے۔

About Admin

Check Also

قبل از وقت انتخابات ہوئے تو کون سی جماعت فائدے میں رہے گی؟ سیاسی ماہرین نے عوام کو صاف صاف بتا دیا

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) پاکستان میں جاری سیاسی و معاشی بحران کے تناظر میں بعض ماہرین …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *