Breaking News

امریکی سازش: عمران خان سچ کہہ رہا ہے یا جھوٹ بول رہا ہے ، دودھ کا دودھ اور پانی کا پانی ایک ہی شخصیت کر سکتی ہے ۔۔۔۔ حیران کن نام سامنے رکھ دیا گیا

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) توشہ خانہ سے حاصل کر کے فروخت کیے جانے والے تحائف کا معاملہ ان دنوں زیر بحث ہے۔ یہی عمران خان اور ان کے ساتھی بالکل قانونی طریقے سے خریدے گئے تحائف پر اعتراض کیا کرتے تھے۔ جن لوگوں نے یہ تحائف خریدے تھے، ان میں سے کسی نے بھی یہ تحائف بین الاقوامی مارکیٹ میں فروخت نہیں کیے تھے۔

اس بار ایسی ان ہونی بھی ہو گزری ہے لیکن گردن زدنی وہی لوگ ہیں جنھیں عمران خان اور ان کے پیرو کار پسند نہیں کرتے۔ سبب کیا ہے؟ سبب وہی جبر ہے جس کی نشان دہی کرٹ لینگ نے کی تھی یعنی جارحانہ پروپیگنڈے کے جبر کی فضا بنا دینا۔ پاکستان میں اس وقت جبر کی یہی فضا پائی جاتی ہے۔کرٹ لینگ کی اس تھیوری کی روشنی میں اس قسم کے جبر کی فضا کے کئی قسم کے نقصانات کا باعث بنتی ہے۔ سردست دو نقصانات کا ذکر ضروری ہے۔ اس قسم کی فضا کاایک نقصان یہ ہو گا کہ متحرک سیاسی کارکنوں کو چھوڑ کر سیاسی تقسیم سے لاتعلق رہنے والے عوام سیاسی عمل سے بیزار ہو جائیں گے۔ ان کی یہ بیزاری سیاسی عمل کے وزن یا مقبولیت میں کمی لائے گی۔ اس کا دوسرا بدترین نقصان یہ ہو گا کہ رائے عامہ تصویر کے دوسرے رخ سے محروم ہو جائے گی۔عوام کبھی جان ہی نہ پائیں گے کہ جبر کے ذریعے مسلط کیے جانے والا بیانیہ اپنی جگہ لیکن حقیقت اس سے مختلف ہے۔اس قسم کی صورت حال میں ضروری ہو جاتا ہے کہ معاشرے میں متحرک دیگر سیاسی قوتیں عوام کے سامنے ایک متبادل بیانیہ پیش کریں۔ اقتدار سے محرومی کے بعد عمران خان نے جو جارحانہ مہم جوئی شروع کی ہے، وہ ایک اعتبار سے ان کا حق ہے لیکن یہ جو کچھ بھی ہے، یک طرفہ ہے۔ عوام کو پوراسچ بتانے کی ضرورت ہے۔ موجودہ صورت حال میں یہ ضرورت مریم نواز ہی پوری کر سکتی ہیں۔ اب انھیں زیادہ دیر تک سیاسی اعتکاف میں نہیں رہنا چاہیے۔ بشکریہ نامور کالم نگار فاروق عادل ۔

About Admin

Check Also

قبل از وقت انتخابات ہوئے تو کون سی جماعت فائدے میں رہے گی؟ سیاسی ماہرین نے عوام کو صاف صاف بتا دیا

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) پاکستان میں جاری سیاسی و معاشی بحران کے تناظر میں بعض ماہرین …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *