Breaking News

‘تحریک انصاف کے اس اقدام سے نئی حکومت مشکلات کا شکار ہو سکتی ہے،حامد میر نے خبردار کردیا

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) واضح رہے کہ عمران خان کو حکومت سے ہٹائے جانے کے بعد پاکستان تحریک انصاف نے پاور شو کے لیے پشاور میں جلسہ کیا جس میں بڑی تعداد میں لوگوں نے حصہ لیا ، اس حوالے سے مختلف اعداد سامنے آ رہے ہیں ۔ اس حوالے سے ایک صحافی نے کہا کہ انٹیلی جنس رپورٹ کے مطابق  جلسے میں شرکت کے لیے 15سے20ہزار لوگ پشاور  آئے۔

جبکہ معروف صحافی و تجزیہ کار حامد میر کا کہنا ہے کہ ہےاگر قومی اسمبلی سے پاکستان تحریک انصاف کےارکان کے استعفے منظور کر لیے جاتے ہیں تو اس کے بعد وہ صوبائی اسمبلیوں سے بھی مستعفی ہو سکتے ہیں جس سے موجودہ حکومت کی مشکلات میں اضافہ ہو گا۔ نجی ٹی وی جیونیوز کےپروگرام میں بات کرتے ہوئے حامد میر کا کہنا تھاقومی اسمبلی سے استعفے دینا پی ٹی آئی کا حکومت پر ایک سیاسی وارہے،پی ٹی آئی استعفوں کے معاملے پر اندھا کھیلی ہے۔انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی کا وزیراعظم کے انتخاب سے پہلے استعفے دینا شہباز شریف کی جیت کو کھٹائی میں ڈالنا چاہتے تھےلیکن شہباز شریف کی تقریر نے ان کے اس تاثر کو کافی حد تک کم کیا ہے۔انہوں نےکہا کہ اگر استعفے قبول ہو جاتے ہیں تو پی ٹی آئی صوبائی اسمبلیوں سے بھی مستعفیٰ ہو جائے گی جس سے حکومت کے لیے مشکلات پیدا ہو سکتی ہیں۔حامد میر کا کہنا تھا کہ جس قسم کی نعرہ بازی اسمبلی میں کی گئی ہے اس سے برا تاثر گیا ہے کیونکہ کوئی کہہ رہا تھا جیے بھٹو،کوئی کہے رہا تھا ہمارا لیڈر شہباز شریف، کوئی حمزہ شہباز کا نعرہ لگا رہا تھا اورکوئی مریم نواز کا نعرہ لگا رہا تھا۔یعنی کے ایوان میں ہر پارٹی ایک دوسرے پر سبقت لینے کی کوشش کر رہی تھی۔میرے خیال میں یہ اچھا تاثر نہیں ہے۔حامد میر کا کہنا تھا کہ ابھی یہ لوگ پارٹی کی ٹکٹوں پر بھی ایک دوسرے سے جھگڑا کریں گے۔

About Admin

Check Also

قبل از وقت انتخابات ہوئے تو کون سی جماعت فائدے میں رہے گی؟ سیاسی ماہرین نے عوام کو صاف صاف بتا دیا

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) پاکستان میں جاری سیاسی و معاشی بحران کے تناظر میں بعض ماہرین …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *