Breaking News

شہباز شریف کے اسمبلیاں توڑنے کے خبریں!! نواز شریف کا فیصلہ کیا ہے؟ شاہزیب خانزادہ کا بڑا دعویٰ

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) اینکر پرسن شاہزیب خانزادہ کا کہنا ہے کہ موجودہ حکومت پر دباؤ ہے کہ وہ مشکل فیصلے کر کے الیکشن کا اعلان کر دے، نواز شریف اس بات کی گارنٹی چاہتے ہیں کہ اگر مشکل فیصلے کرنے ہیں تو پھر مدت پوری کرنے دی جائے۔نجی ٹی وی جیو نیوز کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے شاہزیب خانزادہ نے کہا ۔

کہ اس وقت افواہیں گردش کر رہی ہیں کہ شہباز شریف اسمبلیاں توڑنے کا اعلان کرسکتے ہیں، موجودہ حکومت مشکل فیصلے لینے کے بعد جلد انتخابات کیلئے تیار نہیں ہے، اتحادی بھی چاہتے ہیں کہ اگر مشکل فیصلے کیے جائیں تو وقت بھی پورا کیا جائے۔شاہزیب خانزادہ نے بتایا کہ انہوں نے اس حوالے سے جب حکومتی شخصیات سے سوال کیا تو انہوں نے آف دی ریکارڈ اس بات کی تصدیق کی ہے کہ وہ مخمصے میں پھنس گئے ہیں۔ ہمیں وقت پورا نہیں کرنے دیا جا رہا ، کہا جا رہا ہے کہ آپ مشکل فیصلے کریں اور الیکشن کا اعلان کریں۔ نواز شریف کا یہی فیصلہ ہے کہ اگر مشکل فیصلے کرنے ہیں تو اس بات کی گارنٹی ہونی چاہیے کہ مدت پوری کرنے دی جائے گی۔دوسری جانب اینکر پرسن محمد مالک کا کہنا ہے کہ موجودہ حکومت کی جانب سے مقتدر حلقوں سے یہ ضمانت مانگی جا رہی ہے کہ اگر مشکل فیصلے کرنے ہیں تو پھر حکومت کو مدت پوری کرنی دی جائے گی اور اس کی یقین دہانی قومی سلامتی کمیٹی میں کرائی جائے گی۔ عمران خان کے پریشر سے عدلیہ اور اسٹیبلشمنٹ کی آنکھیں جھپکی ہیں۔نجی ٹی وی دنیا نیوز کے پروگرام “نقطہ نظر” میں گفتگو کرتے ہوئے محمد مالک نے کہا۔

کہ اس وقت بہت کچھ ہو رہا ہے، آئندہ دو دنوں تک صورتحال کافی واضح ہوجائے گی۔ موجودہ حکومت کی طرف سے کہا گیا ہے کہ اگر ہم نے معیشت کے سخت فیصلے کرنے ہیں تو حکومت کی مدت پوری کریں گے ، ہمیں گارنٹی دیں کہ آپ پریشر نہیں ڈالیں گے ۔محمد مالک کے مطابق حکومت سے کہا گیا ہے کہ وہ آئی ایم ایف پیکج تو لے، اگر آئی ایم ایف پیکج آتا ہے تو اس کے نتیجے میں بھی سخت فیصلے ہوں گے اور اس کی ذمہ داری بھی اسی پر پڑے گی جو اس پیکج کو فائنل کرے گا۔ حکومت کا موقف ہے کہ اگر وہ پیکج لیتے ہیں تو ان پر پھر یہ دباؤ نہ ڈالا جائے کہ چار یا چھ مہینے بعد الیکشن کراؤ۔انہوں نے کہا کہ عمران خان کے پریشر سے کچھ جوڈیشل آنکھیں اور کچھ اسٹیبلشمنٹ کی آنکھیں جھپک گئی ہیں، اب ن لیگ نے فیصلہ کرنا ہے کہ کیا یہ سخت فیصلے کرکے بیٹھ جائیں۔ اس وقت بہت سخت بحث چل رہی ہے، آج کی میٹنگ میں بھی یہ بات ہوئی، ن لیگ کہہ رہی ہے کہ اگر قومی سلامتی کمیٹی کے سامنے اونر شپ لیں تو پھر یہ لوگ چلیں گے ورنہ یہ نہیں چلیں گے اور یہ سخت فیصلے کیے بغیر چلے جائیں گے اور حالات بدل جائیں گے۔

About Admin

Check Also

قبل از وقت انتخابات ہوئے تو کون سی جماعت فائدے میں رہے گی؟ سیاسی ماہرین نے عوام کو صاف صاف بتا دیا

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) پاکستان میں جاری سیاسی و معاشی بحران کے تناظر میں بعض ماہرین …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *