Breaking News

جاسوسی کے لیے کتنی رقم دی گئی؟ جاسوسی کا کس کی جانب سے کہا گیا؟ پکڑے جانے والے ملازم کے تہلکہ خیز انکشافات

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان کی بنی گالہ رہائش گاہ پر جاسوسی کرنے والے ملازم نے اہم انکشافات کیے ہیں۔92 نیوز کی رپورٹ کے مطابق ملازم کا کہنا ہے کہ اسے عمران خان کی جاسوسی کے لیے پچاس ہزار روپے دیے گئے تھے،وہ اپنے کیے پر شرمندہ ہے ۔

امید ہے جاسوسی پر مجبور کرنے والے مجھے کچھ نہیں کہیں گے۔جب کہ پی ٹی آئی کی جانب سے جاسوسی کرنے والے ملازم کے خلاف کوئی قانونی کارروائی نہ کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔شہباز گل نے عمران خان کو قانونی کارروائی کا مشورہ دیا لیکن قانونی مشاورت پر کپتان نے اسے معاف کر دیا۔ پی ٹی آئی رہنماء شہباز گل نے کہا ہے کہ ملازم چھ سال سے عمران خان کے گھر میں کام کرتا تھا ، اس ملازم کو عمران خان کے گھر میں ڈیوائس لگانے کا کہا گیا ، اس کے علاوہ ملازم کو دوسرے ملازموں سے رابطہ کرانے کے لیے بھی کہا گیا۔خیال رہے کہ بنی گالہ کے ملازم کے ذریعے چئیرمین تحریک انصاف کی جاسوسی کی کوشش ناکام بنا دیے جانے کا انکشاف ہوا تھا ، اے آر وائی نیوز کے مطابق بنی گالہ کے ملازم کے ذریعے عمران خان کی جاسوسی کیلئے ان کے کمرے میں ایک جاسوسی کی ڈیوائس لگانے کا منصوبہ تیار کیا گیا تھا ، اس مقصد کے لیے بنی گالہ کے ایک ملازم کو کاروباری کا جھانسہ دے کر، پیسوں کی لالچ دے کے کہا گیا کہ عمران خان کے کمرے میں خفیہ ڈیوائس لگائی جائے ، مذکورہ ملازم عمران خان کی جاسوسی کے منصوبے پر عمل کیلئے راضی بھی ہو گیا تھا تاہم عمران خان کی جاسوسی کے منصوبے کا بھانڈا بنی گالہ کے ہی ایک ملازم کی جانب سے پھوڑا گیا اور جس نے بنی گالہ کی سیکیورٹی ٹیم کو جاسوس ڈیوائس لگانے سے متعلق منصوبے سے آگاہ کیا، منصوبے کی اطلاع کے بعد بنی گالہ سیکیورٹی ٹیم نے ملازم کو پکڑ کر پولیس کے حوالے کردیا ۔

About Admin

Check Also

قبل از وقت انتخابات ہوئے تو کون سی جماعت فائدے میں رہے گی؟ سیاسی ماہرین نے عوام کو صاف صاف بتا دیا

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) پاکستان میں جاری سیاسی و معاشی بحران کے تناظر میں بعض ماہرین …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *