Breaking News

’کیا ابھی بھی آرمی چیف سے رابطہ ہوتا ہے‘: صحافی کے سوال پر عمران خان نے کیا جواب دیا ؟ ہر کوئی حیران رہ گیا

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) پی ٹی آئی چیئرمین عمران خان نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جو لوگ رجیم چینج میں ملوث تھے وہ انکوائری نہیں چاہتے ہیں، ملک کے مستقبل کے لیے رجیم چینج کی انکوائری بہت ضروری ہے امریکا کی ساری رجیم چینج دیکھ لیں انہیں کرپٹ لوگ سوٹ کرتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ کیا ہمارے مفاد میں ہے کہ اس طرح کے چوراوپر بیٹھ جائیں اور سوا2 ماہ میں کونسی قیامت آگئی کہ پاکستان کی اکانومی نیچے چلی گئی یہ آج ہمیں بلیم کررہے ہیں کہ ہماری وجہ سے یہ سب کچھ ہوا ہے اگر ہمیں ذمہ دارٹھہرا رہے ہیں تو ہمیں ہٹایا کیوں ہمیں ذمہ داری لے لینے دیتے۔ عمران خان نے کہا کہ چوروں کے ٹولےکو مسلط کرنے کیلئے حکومت اداروں کوتباہ کرے گی اور جب ملک کے ادارے، رول آف لاتباہ کریں گے توملک کا مستقبل تباہ ہوگا اگر یہ کوئی اورچیز کرینگے توملک کو مزید دلدل میں پھنساتے جائیں گے۔ سابق وزیراعظم نے کہا کہ کوئی سوچ نہیں سکتا کرپٹ لوگ اسمبلی میں بیٹھ کر1100ارب کے کیسزمعاف کرالیں انہوں نے نیب قوانین میں ترامیم کردیں نیب اب کچھ نہیں کرسکتا اور انہوں نے اپنی چوری کے تمام دروازے کھول دیئے، چیئرمین تحریک انصاف عمران خان کے اسلام آباد میں ایک سیمینار سے خطاب کے بعد واپس جاتے ہوئے صحافیوں نے سوالات کی بوچھاڑ کردی۔ایک صحافی نے پوچھا کہ ‘خان صاحب توشہ خانہ سے کیا خریدا کیا بیچا؟‘ اس پر عمران خان نے جواب دیا کہ ’یہ توشہ خانہ نہیں توچہ خانہ ہے۔‘ایک صحافی نے پوچھا کہ’خان صاحب کیا ابھی بھی آرمی چیف سے رابطہ ہوتا ہے؟‘ عمران خان نے اس سوال کا جواب دینے سے گریز کیا۔ ’خان صاحب آپ صحافیوں کے سوالات کے جواب کیوں نہیں دیتے؟‘ اس پر بھی عمران خان نے کوئی جواب نہ دیا اور مسکرا کر گاڑی میں بیٹھ گئے۔

About Admin

Check Also

قبل از وقت انتخابات ہوئے تو کون سی جماعت فائدے میں رہے گی؟ سیاسی ماہرین نے عوام کو صاف صاف بتا دیا

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) پاکستان میں جاری سیاسی و معاشی بحران کے تناظر میں بعض ماہرین …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *