Breaking News

حمزہ شہباز کو وزیراعلیٰ نہیں کہا جاسکتا کیونکہ ۔۔۔۔اعتزاز احسن نے قانونی نکتہ بیان کر دیا

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) ماہر قانون اعتزاز احسن نے کہا ہے کہ سینئر صحافی ایاز امیر پر اٹیک کی سخت الفاظ میں مذمت کرتا ہوں، ایاز امیر کے ساتھ یکجہتی کے طور پر ہر لحاظ سے ان کی معاونت کیلئے حاضر ہوں، وزیر اعلی پنجاب حمزہ شہباز کے نام کے ساتھ اس وقت وزیراعلیٰ نہیں لکھا جا سکتا۔

سپریم کورٹ کا اختیار نہیں کہ کسی کو بیٹھے بٹھائے وزیراعلیٰ یا وزیراعظم بنا دے، 16اپریل کو حمزہ شہباز کے ووٹوں سے 25ووٹ مسترد ہوجاتے تو وہ وزیراعلیٰ نہیں بن سکتا تھا، حمزہ شہباز وزیراعلیٰ کیلئے 186ووٹوں کی سادہ اکثریت حاصل نہیں کر سکا تھا، سپریم کورٹ کے حکم کے مطابق حمزہ شہباز کو ملنے والے پی ٹی آئی کے 25منحرف اراکین کے ووٹ شمار نہیں کیے جائیں گے، منحرف اراکین سے متعلق سپریم کورٹ کے فیصلے کو سراہتا ہوں۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے ایک انٹرویو میں کیا۔ دوسری جانب اینٹی کرپشن یونٹ نے فرح خان  کیس میں دو ملزمان کو گرفتار کرلیا ہے جن کا تعلق فیصل آباد انڈسٹریل سٹیٹ ڈویلپمنٹ اینڈ مینجمنٹ کمپنی (فیڈمک) سے ہے۔ ایکسپریس نیوز کے مطابق اینٹی کرپشن کے مطابق فیڈمک کے سابق چیف ایگزیکٹو آفیسررانا یوسف اور سیکرٹری سپیشل اکنامک زون کمیٹی مقصود احمد پر فرح گوگی کو فیصل آباد سپیشل اکنامک زون میں انتہائی قیمتی دس ایکڑ اراضی کوڑیوں کے دام الاٹ کرنے کا الزام ہے۔حکام کے مطابق ملزمان نے فرح گوگی اور انکی والدہ کی کمپنی المعز ڈیری کو غیر قانونی طور پر 60 کروڑ مالیت کا پلاٹ صرف 8 کروڑ 30 لاکھ روپے میں الاٹ کیا۔انڈسٹریل پلاٹ حاصل کرنے کیلئے فرح گوگی کے شوہر احسن جمیل گجر نے دو ارب کی جعلی گارنٹی دی،اینٹی کرپشن فرح گوگی اور احسن جمیل گجر کے اثاثوں کی چھان بین بھی کر رہی ہے۔ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کرتے ہوئے تین رکنی جوائنٹ انوسٹی گیشن ٹیم نے تحقیقات کا آغاز کردیاہے۔

About Admin

Check Also

قبل از وقت انتخابات ہوئے تو کون سی جماعت فائدے میں رہے گی؟ سیاسی ماہرین نے عوام کو صاف صاف بتا دیا

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) پاکستان میں جاری سیاسی و معاشی بحران کے تناظر میں بعض ماہرین …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *