Breaking News

ایک مہینے بعد آج پہلا دن ہے جب مجھے سکون کی نیند آئی ہے ، پہلے تو ایسے لگتا تھا جیسے۔۔۔۔ عابد ملہی نے حیران کن بات کہہ دی

لاہور (نیوز ڈیسک) سانحہ موٹروے کیس کے مرکزی ملزم عابد ملہی کو کیمپ جیل لاہور کی چکی میں تنہا بند کر دیا گیا، ملزم کا کہنا ہے کہ وہ ایک ماہ تک ڈرا سہما رہا، لگتا تھا کہ ہر فرد پولیس والا ہے اور اسے پہچانتے ہی ختم کر دے گا، گرفتاری کے بعد پہلی بار اچھی طرح سویا ہوں۔

لاہور سیالکوٹ موٹر وے پر 9 اور 10 ستمبر کی درمیانی شب خاتون سے ہونے والے واقعہ کے ملزمان بالآخر جیل کی سلاخوں کے پیچھے چلے گئے۔ اطلاعات کے مطابق جیل حکام کا کہنا ہےکہ مرکزی ملزم عابد ملہی کو کیمپ جیل کی چکی میں اکیلا رکھا گیا ہے، شناخت پریڈ ہونے تک ملزم کو فیملی سے ملاقات کی اجازت نہیں ہو گی۔ملزم عابد ملہی کا کہنا ہے کہ اُس نے ایک مہینے بعد پہلی بار پیٹ بھر کر کھانا کھایا اور سکھ کی نیند بھی سویا ہوں۔عابد ملہی نے کہا کہ اس سے قبل مسلسل بے چین اور خوف زدہ رہا، اس کی طرف جو بھی دیکھتا، وہ پولیس والا ہی لگتا تھا اور مجھے ایسا محسوس ہوتا تھا کہ وہ دیکھتے ہی پہچان لے گا اور گولی مار دے گا۔عابد ملہی کا یہ بھی کہنا تھا کہ وہ گرفتاری سے قبل والدین سے ملنا چاہتا تھا، یہ خواہش پوری ہو گئی، گرفتاری کے بعد خود کو محفوظ سمجھنے لگا ہوں، جبکہ عدالت جو بھی سزا دے گی قبول کروں گا۔یاد رہے کہ ملزم عابد ملہی کے والدین کے بھی نئے انکشافات سامنے آئے تھے،نجی ٹی وی کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا جب ہمارا بیٹا گھر آیا تو اس نے کہا کہ امی میں نے روٹی کھانی ہے چار دن سے کچھ نہیں کھایا بھوکا ہوں۔ پولیس نے اسے روٹی نہیں کھانے دی اور پکڑ کر لے گئی۔ جب ہم نے اپنے بیٹے کو پولیس کے حوالے کیا تو اس نے کہا کہ آپ لوگوں نے میرے ساتھ دھوکا کیا ہے۔

About Admin

Check Also

سندھ میں گورنر راج کا نفاذ۔۔۔ گورنر سندھ نے اعلان کردیا

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) کافی عرصے سے یہ باتیں گردش کر رہی تھیں کہ سندھ میں …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *