Breaking News

مولانا خادم حسین رضوی کس طرح معذور ہوئے تھے ؟ تفصیلات سامنے آ گئیں

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) تحریک لبیک کے سربراہ مولانا خادم حسین رضوی 55 برس کی عمر میں انتقال کر گئے ہیں اور ان کی نماز جنازہ کل صبح بروز ہفتہ 11 بجے مینار پاکستان میں ادا کی جائے گی جس میں شرکت کیلئے مختلف شہروں سے قافلے روانہ ہو چکے ہیں جبکہ یتیم خانہ چوک پر واقع مسجد سے ملحقہ گھر میں ان کے جسد خاکی کو رکھا گیا ہے۔

جہاں ان کے چاہنے والوں کی بڑی تعداد موجود ہے ۔ گزشتہ سال شوبز انڈسٹری سے کنارہ کشی اختیار کرنے والی رابی پیرزادہ کہتی ہیں کہ خادم حسین رضوی کے کارکنان نے ہمیشہ ان کے کام کو سراہتے ہوئے ان کے لیے مثبت پیغام جاری کیے ہیں۔ تحریک لبیک کے سربراہ 54 سالہ ممتاز عالم دین علامہ خادم حسین رضوی کے اچانک انتقال پر شدید افسوس کا اظہار کرتے ہوئے رابی پیرزادہ نے مائیکرو بلاگنگ سائٹ ٹوئٹر پر جاری کیے گئے اپنے پیغام میں کہا کہ ’مجھےخادم حسین رضوی صاحب کی اچانک وفات کا سن کر بہت دکھ ہوا۔‘ تفصیلات کے مطابق مولانا خادم حسین رضوی کا تعلق اٹک کے ایک گاﺅں ” نکہ توت “ سے تھا ،وہ 22 جون 1966 میں پیدا ہوئے۔ گزشتہ رات انتقال کرنے والے تحریک لبیک پاکستان (ٹی ایل پی) کے سربراہ علامہ خادم حسین کا اپنی موت سے متعلق ایک بیان سوشل میڈیا پر زیر گردش ہے۔خادم حسین رضوی کے اچانک انتقال کی خبر کے بعد خادم حسین رضوی کا ایک پرانا ویڈیو کلپ بھی سوشل میڈیا پر وائرل ہورہا ہے جس میں وہ اپنی موت کے حوالے سے بات کر رہے ہیں۔ اپنے بیان میں خادم حسین رضوی کو کہتے سنا جاسکتا ہے کہ ’ایک دن اعلان ہوگا مولوی خادم مر گیا، کوئی کہے گا بہت اچھا بندہ تھا، جبکہ کوئی کہے گا بہت برا تھا۔‘

بیان سننے والوں مخاطب کرتے ہوئے خادم حسین رضوی کہتے ہیں کہ ’تم لوگ کہہ دینا اچھا انسان تھا پر سخت تھا، لیکن یاد رکھنا آج میرا ساتھ دے لو ورنہ بعد میں ہمارے جیسا کوئی نہیں ملے گا۔‘ تاہم 2009 میں پیش آنے والے ایک حادثے میں وہ معذور ہو گئے اور وہیل چیئر تک محدود ہو گئے تھے ، جس کی کچھ تفصیلات اب سامنے آ گئی ہیں ۔ غیر مصدقہ اطلاعات کے مطابق مولانا خادم حسین رضوی کے بڑے بھائی امیر حسین رضوی گاﺅں میں مسجد تعمیر کروا رہے تھے تو وہ اس سلسلے میں 2009 میں اپنے گاﺅں جانے کیلئے سفر پر روانہ ہوئے ، راستے میں ایک ڈرائیور کو نیند آ گئی اور ایک موڑ سے گاڑی نیچے جا گری ، اس حادثے میں مولانا خادم حسین رضوی کے سر اور مغز میں شدید چوٹیں آئیں جس کے باعث ان کے جسم کا نچلا حصہ معذور ہو گیا ۔ مولانا خادم حسین رضوی کی شادی اپنے چچا کی بیٹی سے ہوئی اور ان کیلئے رشتہ بھی ان کے والد لعل خان کی جانب سے پسند اور طے کیا گیا تھا ، 1993ءمیں محکمہ اوقاف میں خطیب کی ملازمت کے بعد یہ شادی ہوئی تھی ۔ حافظ خادم حسین رضوی کی اولاد میں دو بیٹے اور چار بیٹیاں شامل ہیں۔ان کے بیٹوں کے نام حافظ محمد سعد اور حافظ محمد انس ہیں ، دونوں بیٹے حافظ قرآن ہیں اور درس نظامی کا کور س کر رہے ہیں ۔

About Admin

Check Also

چوہدری نثار کی شہباز شریف سے ملاقات! خواجہ سعد رفیق بھی میدان میں آگئے، دوٹوک اعلان

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) دو یوم قبل سابق وفاقی وزیر داخلہ چودھری نثار علی خاں نے …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *